جب تجارت اور آخرت دونوں کا نقصان تو پھر جھوٹ بولیے ہی کیوں؟

سوال تھا: ''کیا بزنس کمیونٹی میں غلط بیانی کا ریشو موجود ہے؟

'' جواب ملا: ''ہے بھی اور نہیں بھی!''
عرض کیا: ''آپ کا مطلب ہے ففٹی ففٹی؟''
ان کا کہنا تھا: ''نہیں! میرا مطلب ہے: جھوٹ بولنے میں چھوٹے اور بڑے تاجر کا، گاہک اور گاہک کا، معیار اور مقدار کافرق

مزید پڑھیے۔۔۔

مشینی دل، آہنی دماغ

اس کالے بھجنگ حبشی کا بس ایک ہی قصور تھا۔ وہ بے روزگار تھا اور امریکا کے ایک ہوٹل کا ملازم۔ اسے تھوڑی بہت منت ترلے کے بعد نوکری مل ہی گئی۔ یوں کہیے کہ اسے مانگے کی مصیبت کچھ اضافے کے ہمراہ عطا ہوگئی۔ کہا گیا تہ خانے میں بیٹھ کر برتن مانجھتا اور اچھالتا رہے۔ اگلے مرحلے پر دوسرا ملازم انہیں ٹھکانے لگاتا رہے گا۔ یہ سب کام مشینی انداز میں ہونا چاہیے۔ مسلسل آٹھ

مزید پڑھیے۔۔۔

استخارے کی برکتیں

 ہر فیصلہ ، اٹل فیصلہ

٭۔۔۔۔۔۔حدیث پاک میں ہے: جس نے کام کا آغاز استخارہ کر کے کیا، وہ ناکامی و نامرادی سے محفوظ رہا

٭۔۔۔۔۔۔دعا پڑھنے کے بعد پاک صاف بستر پر با وضو ہو کر قبلہ رخ سو جائیں، بیداری کے بعد جو بات دل میں مضبوطی سے آئے وہی بہتر ہے، اسی کو اختیار کرنا چاہیے

مزید پڑھیے۔۔۔

ایک ہتھیار، ایک حصار

٭۔۔۔۔۔۔روباری نقصانات سے بچاؤ، خاندانی الجھنیں، اولاد کے مسائل اور دولت میں بے برکتی وغیرہ سارے مسائل کا واحد حل یہ دعائیں ہیں
٭۔۔۔۔۔۔جس کا یقین جتنا بڑا ہوتا ہے قبولیت اسی درجے میں، بہت جلد اور خواہش کے مطابق ہوتی ہے

مزید پڑھیے۔۔۔

غیور بنو!

٭۔۔۔۔۔۔ اگر ہم اپنی دینی غیرت کا پرچم کسی میدان میں سرنگوں نہ ہونے دیں تو اپنے دینی شعائر ، مذہبی احکام، شرعی وضع قطع اور اسلامی تہذیب وتمدن کے حوالے سے ہرگز احساس کمتری کا شکار نہ ہوں
٭۔۔۔۔۔۔ہم اپنی ذات میں جو کچھ بھی ہوں، ہم ماہر تعلیم، سائنسدان، سیاست دان، منصب دار اور تاجر بعد میں ہیں، رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے امتی پہلے ہیں ٭٭

مزید پڑھیے۔۔۔

آپ لوگوں کے ساتھ معاملہ کیسے کریں؟

بات سادہ اس قدر ہے کہ محض بچگانہ سی لگے۔ مگر اس کی اثر انگیزی کو دیکھیے تو ہماری زندگی کاکوئی گوشہ اس سے بے نیاز نہیں۔فرض کریں، دو دوست ہیں۔ وہ ایک دوسرے کے احوال سے خوب باخبر رہتے ہیں۔ کسی دن اچانک ایک دوست کا کوئی بڑا نقصان ہو جاتا ہے۔ اس کی خبر دوسرے دوست کوبھی پہنچتی ہے۔پہلا دوست نہایت غمگین ہے۔ اسے طرح طرح کے خیالات اور وسوسےستا رہے ہیں۔ ایسے میں اس کا دوست اس کے پاس پہنچتا ہے۔ 

مزید پڑھیے۔۔۔