سکون قلب کا راز

مطلوبہ طمانیت اسی نسبت سے حاصل ہو گی جس قدر ہم دین اور دینداری کے قریب ہوں گےحقیقت شناسی کے تقاضے سے ہمیں پریشانی اور آسودگی ہر دو حالت میں قانع، صابر، شاکر اور راضی رہنے کے سوا چارہ نہیںاللہ کا صد فضل کہ ہم مسلمان ہیں، ورنہ ہماری بھی بے صبری، بے یقینی، بے چینی اور بیزاری کی سرحدیں خدا نخواستہ خود کشی ایسی ذلیل موت سے کم نہ ہوتیںحد نگاہ پر

مزید پڑھیے۔۔۔

حل ڈپریشن کا!

 جیسی زندگی، جیسے حالات اور جیسی بھی صورت حال سے نباہ کرنا پڑ جائے، ان میں ’’ایڈجسٹمنٹ‘‘ سب سے کامیاب پالیسی ہے۔ اطمینان رہے گا، سکون ملے گا، ہلکی پھلکی اور سبک سیر حیاتی گزارنے کو ملے گیاگر ہم اس سب کے بجائے اس سہ لفظی حکمت پر عمل پیرا ہوں تو نہ رہے بانس نہ بجے بانسری، ہمہ وقت ٹینشن، ڈپریشن اور ذہنی کوفت کی جڑ ہی کٹ جائے۔ وہ ہے: ’’درگزر‘‘،

مزید پڑھیے۔۔۔