القرآن
عذاب سے بچنے والے

قومِ لوط پر ہم نے پتھروں کا مینہ برسایا، سوائے لوط علیہ السلام کے گھر والوں کے جنہیں ہم نے سحری کے وقت بچا لیا تھا، یہ ہماری طرف سے ایک نعمت تھی۔ جو لوگ شکر گزار ہوتے ہیں، ان کو ہم ایسا ہی صلہ دیتے ہیں۔ (القمر: 35،34)

 

 


  الحدیث
ذخیرہ اندوزی ، کتنی خطر ناک؟

  رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: جو شخص غلہ وغیرہ روک کر رکھے تاکہ وہ جب مہنگا ہوجائے، تب مسلمانوں کو فروخت کرے تو وہ گنہگار ہے، اللہ اور اس کا رسول اس سے بَری ہے۔ (کنزالعمال: 97/4)

القرآن
بدلہ بقدرِ محنت

اور یہ کہ انسان کو خود اپنی کوشش کے سوا کسی اور چیز کا (بدلہ لینے کا) حق نہیں پہنچتا، اور یہ کہ اُس کی کوشش عنقریب دیکھی جائے گی، پھر اُس کا بدلہ اُسے پورا پورا دیا جائے گا۔ (سورہ النجم: 41،40،39)

 

 


  الحدیث
صبح بابرکت

  حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا سے مروی ہے آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: رزق کے حاصل کرنے میں دن کا شروع وقت اختیار کرو کہ دن کے شروع وقت میں برکت ہے اور کامیابی ہے۔(مجمع الزوائد: 64/4)

القرآن
رحمن کون؟

وہ رحمن ہی ہے، جس نے قرآن کی تعلیم دی۔ اُسی نے انسان کو پیدا کیا، اُسی نے اُس کو بات واضح کرنا سکھایا۔ (الرحمن: 4-1)

 

   


  الحدیث
عیب نہ چھپائیں

  رسول اللہ صلی اللہ علیہ و سلم نے فرمایا: ’’مسلمان مسلمان کا بھائی ہے، کسی مسلمان کے لیے حلال نہیں کہ اپنے بھائی سے سامان کی کسی ایسی بات کو چھپائے کہ وہ جان لیتا تو خریدنا چھوڑ دیتا۔‘‘ (مجمع الزوائد: 80/4)

القرآن
پھر دیکھ لو میرا عذاب!

قومِ عاد نے بھی جھٹلایا، پھر دیکھ لو کہ میرا عذاب اور تنبیہات کیسی تھیں؟ ہم نے ایک مسلسل نحوست کے دن میں ان پر تیز آندھی والی ہوا چھوڑ دی تھی، جو لوگوں کو اس طرح اُکھاڑ پھینک دیتی تھی جیسے وہ کھجور کے ُاکھڑے ہوئے درخت کے تنے ہوں۔ (القمر)

 

 


  الحدیث
جھکتا وزن کرو!

  حضرت سوید بن قیس رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے وزن کرنے والے سے فرمایا کہ وزن کرو تو ذرا جھکتا وزن کرو۔ (کنزالعمال: 29)

القرآن
خود کو پاکیزہ نہ ٹھہرائو !

وہ (تمہارا پروردگار) تمہیں خوب جانتا ہے جب اُس نے تمہیں زمین سے پیدا کیا، اور جب تم اپنی ماؤں کے پیٹ میں بچے تھے، لہٰذا تم اپنے آپ کو پاکیزہ نہ ٹھہراؤ۔ وہ خوب جانتا ہے کہ کون متقی ہے۔ ( النجم: 32)

 

 


  الحدیث
جس نے قرض معاف کیا

  رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: ’’جس نے کسی تنگدست اور پریشان حال کو ادائیگی میں مہلت دی، یا اس کو معاف کردیا، اللہ تعالیٰ اسے قیامت کے دن کی مصیبت سے نجات دے گا۔‘‘ (صحیح مسلم: 180)