برائلرکی خریدوفرخت

پوری دنیا میں مرغیوں کے فارم موجود ہیں جن کی کھپت کا اندازہ کرنا بھی مشکل ہے۔ کیونکہ دنیا میں ہر طرز کے لوگ مرغی کا استعمال کرتے ہیں۔ اگرچہ خوراک کے بے شمار ذرائع موجود ہیں مگر مرغی کے مقابلے میں ہر طرح کے پروٹین مہیا کرنے والے عوامل نسبتاً زیادہ قیمتی ہوتے ہیں۔ مرغی کا استعمال عام سطح کے افراد بھی بآسانی کر لیتے ہیں۔ اس کی وجہ مرغی کے گوشت کا سستا ہونا ہی ہے۔

مزید پڑھیے۔۔۔

عالمی تجارت کا نیا تناظر اور مارکیٹنگ مینجمنٹ

دورِ جدید میں قدرت نے بہت سی نعمتیں عطا کی ہیں، مگر ساتھ ہی ہم نے کچھ زحمتوں بھی اختیار کر لیا ہے۔ ادویات کی پیداوار میں بے شمار اضافہ ہوا ہے۔ خود کار مشینوں اور جدید اقسام کی بھاری مشینوں کے استعمال سے پیداوار میں کئی گنا اضافہ ہو گیا ہے۔ کمپیوٹر اور انٹرنیٹ کے وجود سے عالمی تجارت (Global Trade) کو فروغ حاصل ہوا ہے اور سرد جنگ (Cold War) کا خاتمہ ہو چکا ہے۔ آج کا انسان دنیا سے بھوک اور وبائی امراض کو مٹانے کی طاقت حاصل کر چکا ہے۔

مزید پڑھیے۔۔۔

پھلوں کی خرید و فروخت

٭٭آج کل ملکی اور بین الاقوامی سطح پر پھلوں کی خرید و فروخت بہت بڑے پیمانے پر ہو رہی ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ دنیا کے کچھ ممالک اس دولت سے مالا مال ہیں اور کچھ تہی دامن، پھر اندرونِ ملک بھی کچھ علاقوں میں ان کی فراوانی ہے اور بعض جگہوں میں بہت قلت۔ چنانچہ اس فطری تقسیم کی وجہ سے مختلف علاقوں اور ممالک کے تاجر دیگر جگہوں سے اس کی خرید و فروخت پر مجبور ہیں۔

مزید پڑھیے۔۔۔

میانہ روی اور کفایت شعاری

ایک بزرگ کے پاس ایک شخص حاضر ہوا۔ اپنی تنگ دستی کا شکوہ کرتے ہوئے کہا: ’’حضرت! گھر کے خرچے پورے نہیں ہو رہے، قرض بڑھتا چلا جا رہا ہے۔ کوئی وظیفہ بتا دیجیے، تاکہ اس مشکل سے چھٹکارا ملے۔‘‘ بزرگ نے پوچھا: گھر میں روزانہ کیا سالن پک رہا ہے؟ اس نے جواب دیا: الحمد للہ! معمول کے مطابق پک رہا ہے۔ بزرگ نے پوچھا: معمول کا کیا مطلب! جواب دیا: عام طور پر سادہ سالن ہوتا ہے جبکہ تین، چار دن کے بعد گوشت بھی پک جاتا ہے۔

مزید پڑھیے۔۔۔

ملازمین سے احسان کا معاملہ کرنا

احسان یاد رکھیں ملازمین کے احسان کبھی نہیں بھولنے چاہییں۔ جوملازم مشکل وقت میں آپ کے ساتھ رہے، انہیں اچھے وقت میں نظر انداز نہ کیجئے۔ بہت سے ادارے جب ترقی حاصل کرجاتے ہیں اور ان کو اعلی تعلیم یافتہ افراد میسر آتے ہیں تو پھر وہ اپنے ان ملازمین کو بھول جاتے ہیں جنہوں نے مشکل حالات میں ادارے، کمپنی یا فرم کو سہارا دیا ہوتا ہے۔ حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی سیرت سے ہمیں معلوم ہوتا ہے کہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنے محسنین کو کبھی بھی فراموش نہیں کیا۔

مزید پڑھیے۔۔۔

عالمگیریت (Globalization) کے چیلنجز

گذشتہ صدی میں دیوار برلن کے انہدام اور سویت یونین کی شکست کے بعد عالمی سطح پر سب سے اہم سوال یہ اٹھا کہ جس دنیا میں ہم رہ رہے ہیں وہ کس سمت جا رہی ہے؟ اس بحث میں سب سے اہم سوال گلوبلائزیشن (جو 1897ء میں یہود قیادت نے پروٹوکولز کے نام سے تشکیل دی تھی) کے بارے میں پیدا ہوا کہ اس کی حقیقت کیا ہے؟ اس کے اغراض و مقاصد کیا ہیں؟ اغراض و مقاصد کے حصول کے لیے کیا اقدامات ہوں؟ اس کے اثرات و نتائج کیا ہوں گے؟

مزید پڑھیے۔۔۔