ناسمجھ بچے کا خریدوفروخت کے معاملات کرنا

مسئلہ:2/30-نیا معاملہ طے کرنے سے پہلا ختم ہو جائے گا
اگر ایک چیز سے متعلق دوبارہ ایجاب و قبول کرنے (یعنی نیا معاملہ کرنے) کی یہ صورت ہو کہ ایک فاسد و ناجائز معاملہ کرنے کے بعد دوبارہ نئے ایجاب و قبول کے ساتھ دوسرا معاملہ کیا جائے اور اس دوسرے معاملے میں اس سے اجتناب کیا جائے جو پہلے معاملے میں فساد کا باعث بنی تھی تو مذکورہ بالا تین صورتوں میں سے جو بھی صورت اختیار کی جائے گی، تو اس سے پہلا ناجائز معاملہ خود بخود ختم تصور ہو گا اور ایک نیا معاملہ وجود میں آئے گا، جس کے بعد اس چیز کا استعمال (جوپہلے فاسد معاملہ کے نتیجے میں جائز نہ تھا) جائز ہو جائے گا۔ (شرح المجلہ للاتاسی: 42/2، مکتبہ رشیدیہ)

مزید پڑھیے۔۔۔

سونے چاندی کا کاروبار:خرید وفروخت کے جدید طریقے

سادہ طریقے سے خریدوفروخت کی صورتیں

مختلف کمپنیاں اور ان کا طریقہ کار:
آج کل فاریکس اور اس کے نام سے کاروبار کرنے والی نئی کمپنیاں وجود میں آئی ہیں۔ اس کاروبار کے طریقہ کار کی تفصیلات سامنے آئی ہیں۔ ان سے معلوم ہوتا ہے کہ اس کاروبار کی وہ تمام تر صورتیں جو عام طور سے اختیار کی جاتی ہیں، نا جائز ہیں۔

مزید پڑھیے۔۔۔

ایجاب و مقبول کے مختلف الفاظ

مسئلہ-22: استفہامیہ یا حکمیہ جملے کے ذریعے ایجاب و قبول:
ایجاب و قبول تحریر کے ذریعے ہو یا زبانی ہو، دونوں صورتوں میں ضروری ہے کہ سوالیہ (استفہامیہ) یا امریہ (حکمیہ) جملہ نہ ہو، کیونکہ اس طرح جملے حتمی پیشکش یا قبول کے لیے نہیں بولے جا سکتے، البتہ ایسے جملوں کے بعد اگر حتمی ایجاب و قبول کے جملے بھی بولے گئے، مثلاً: خریدار نے کہا: ’’کیا آپ نے مجھے یہ چیز فروخت کر دی؟ فروخت کرنے والے نے کہا: ’’ہاں‘‘، تو یہاں تک معاملہ مکمل نہیں ہوا، لیکن اگر اس کے بعد خریدار یہ کہے: میں نے یہ چیز خرید لی، تو اب معاملہ مکمل ہو جائے گا۔

مزید پڑھیے۔۔۔

عوامی زبان میں عقدِ بیع بذریعہ خط و کتابت

مسئلہ-1/17: ایک ہی شخص کے ذریعے ایجاب وقبول کاعمل انجام پانا: خرید و فروخت کے معاملے میں ایک ہی شخص جانبین کا وکیل (Agent) بن کر معاملہ نہیں کر سکتا، بلکہ ضروری ہے کہ دو الگ الگ اشخاص ایجاب و قبول کا عمل انجام دیں، البتہ بعض خاص صورتوں میں اکیلا ایک شخص بھی پورے معاملہ کو انجام دے سکتا ہے، مثلا: خود والد یا والد کا مقرر کردہ وصی (مرتے وقت جس شخص کو ترکہ کی حفاظت

مزید پڑھیے۔۔۔

مارکیٹ میں قرض کی مروّجہ صورتیں

تعارف
القرض(loan) عربی زبان کا لفظ ہے ، جس کے لغوی معنی قینچی یا دانت سے کوئی چیز کاٹنے کے ہیں۔ اس کا شرعی معنی یہ ہے کہ کسی کو اپنے مال یا چیز کا بغیر کسی طے شدہ مدّت کے اس طور پر مالک بنانا کہ وہ اس کی مثل واپس کرے۔

کسی شخص کو قرضِ حسن یعنی بغیر کسی نفع کے قرض دینا، یقینا ً اللہ تعالیٰ کے نزدیک بڑے اجر و ثواب کی چیز ہے۔

مزید پڑھیے۔۔۔

’’عملی لین دین‘‘ کی صورتیں اور مسائل

چوتھا مسئلہ-زبانی (عملی طور پر) معاملہ انجام دینے کی شرطیں:
عملی لین دین (کچھ کہے بغیر عوض اور مطلوبہ چیز کا تبادلہ کر لیا جائے، یعنی) کچھ کہے بغیر معاملہ انجام دینے کی دو شرطیںہیں:
پہلی شرط:
اس قسم کی خرید و فروخت اسی وقت درست ہو گی جب قیمت طے کی جاچکی ہو یا اس چیز کی قیمت پہلے سے معروف ومعلوم ہو، طے کرنے کی ضرورت نہ ہو۔

مزید پڑھیے۔۔۔