دین، دانش، لچک، آسانی، منطق

٭۔۔۔۔۔۔ آج کتنے لوگ ہیں جو اسلام کی زریں ہدایت کو غیر ضروری سمجھ کر اپنے ایمان کو خطرے میں ڈال رہے ہیں جامعۃ الرشید کی حدود میں داخل ہوتے ہی ایک متفکر چہرہ اپنی جانب توجہ کھینچ رہا تھا۔ یہ کلیۃ الشریعہ کے پہلے بیچ کا ایک طالب علم تھا۔ گریجویٹس کو عالم بنانے کا یہ سلسلہ نیا نیا شروع ہوا تھا۔ اس لیے ہمیں جامعہ کے سرپرستوں کی جانب سے ہدایت تھی کہ

مزید پڑھیے۔۔۔

خیانت: کج فطرت کا تقاضا دیانت: سلیم المزاج کی ادا

اگر ''دیانت'' کی تعریف(Definition) کسی سے پوچھی جائے تو شاید اسے بتانے میں مشکل ہو کیوں کہ یہ ایک فطری بات ہے اور ہر ایسی چیز کی تعریف کرنا مشکل ہوتا ہے۔ یہ ایسی چیز ہے کہ فطرت سلیمہ کو اس حوالے سے کبھی ابہام پیدا ہی نہیں ہونا چاہیے۔ یہی حال ''بدعنوانی'' یا ''کرپشن'' کے لفظ کا ہے۔ یہ ایسی چیز ہے کہ بہت واضح ہونے کی وجہ سے اس کی کوئی لگی بندھی

مزید پڑھیے۔۔۔

ہینگ اور پھٹکری لگے بغیر سیل بڑھانے کاکامیاب گر

تعارف پرسنل سیلنگ کامطلب فروخت کنندہ (Seller) کا گاہک کے ساتھ (اشیا کی خرید و فروخت کے لیے) زبانی (بالمشافہ ،بذریعہ ٹیلی فون، Skype وغیرہ) کے ذریعے گفتگو کرنا۔
مارکیٹنگ کے فنی ماہرین کاکہنا ہے کہ سیلز مین (Sales Man) بمقابلہ دیگر پروموشن ذرائع مثلاً: تشہیر وغیرہ کلائنٹ کی زیادہ توجہ

مزید پڑھیے۔۔۔

دینی مزاج سے ہم آہنگ بزنس تعلیم

شاید آپ کو یہ سوال پہلی نظر میں بچگانہ لگے، لیکن مختلف فنون کے ماہرین کے ہاں ا س کے جوابات مختلف ہو سکتے ہیں، مثلاً: انجینئر جو اعداد و شمار کی حساسیت کا قائل ہے وہ اس کا جواب یوں دے سکتا ہے: "4.00000approx"، اسی طرح وسائل کی کمیابی (Scarcity) سے پریشان اکنامسٹ اگر اس کا جواب سوچے تو شاید اس کا جواب 2 سے بھی کم یا منفی میں ہو۔ یہی سوال

مزید پڑھیے۔۔۔

شعبہ زراعت کے لیے ''اسے معجزہ نہ کہیں، تو کیا کہیں؟''

٭۔۔۔۔۔۔ احادیث کے مطالعے سے یوں لگتا ہے جیسے آپ صلی اﷲ علیہ وسلم عرب کے محدود معاشرے کے لیے نہیں، بلکہ آج کی عالمگیریت کے تناظر میں پیدا ہونے والے جدید زرعی معاشی نظام کے لیے ہدایات جاری کر رہے ہوں ٭۔۔۔۔۔۔٭
حضرات انبیاء علیہم السلام اللہ تعالیٰ کی جانب سے دی گئی رہنمائی ہی کو امت تک پہنچاتے ہیں۔ قرآن کریم نے اس مضمون کو یوں 

مزید پڑھیے۔۔۔

نیند کے مسئلے کا حل

اگر آپ سے پوچھا جائے کہ آپ کیوں سوتے ہیں تو شاید اکثر کی رائے یہی ہو کہ ہم دماغ کو آرام دینا چاہتے ہیں۔ لیکن ذراسوچیے! کیادماغ کبھی آرام بھی کرتا ہے؟ ظاہر ہے کہ اگریہ سوتا ہوتا توہم خواب کیونکر دیکھتے؟ معلوم ہواکہ دماغ کو کسی پل آرام کی حاجت نہیں، یہ توہماری نیند کے دوران بھی کام میںلگارہتاہے۔ ہماراجسم سوتا ہے۔ آپ حیران ہورہے ہیں۔ نیند اللہ تعالی

مزید پڑھیے۔۔۔