مارکیٹ کی شعبہ جاتی تقسیم

انڈیا میں ٹاٹا کمپنی نے مرسڈیز بنز کار متعارف کرائی ہے۔ بہت سے لوگوں کو کار کی تو ضرورت ہے، مگر اس طرح کی مہنگی اور لگثرری کار بہت کم لوگ خریدنا چاہتے ہیں۔ اکثر لوگ سنٹرو اور ماروٹی خرید کر ہی خوش رہتے ہیں۔ کچھ ایسے بھی ہیں جو لگثرری کار تو خریدنا چاہتے ہیں، لیکن مرسڈیز نہیں خریدنا چاہتے، کیونکہ مرسڈیز گاڑی رکھنے والوں پر محکمہ انکم ٹیکس بھی گہری نظر رکھتا ہے۔ ایسے لوگ ہنڈا سٹی، فورڈفیسٹا اور ان جیسی دوسری آرام دہ گاڑیاں پسند کرتے ہیں۔

مزید پڑھیے۔۔۔

بجٹ کیوں ضروری ہے؟

کمپنیاں اپنی پرفارمنس اور معیار جانچنے کے لیے بجٹ بناتی ہیں۔ یہ اس لیے ضروری ہوتا ہے تا کہ ہم پہلے سے اپنی کاسٹ کا اندازہ لگا سکیں اور پھر اس کی بنیاد پر اپنی Prices مقرر کر سکیں۔ نیز تاکہ ہمارے بجٹ اور حقیقی اعداد وشمار میں کتنا فرق آیا ہے ،اس کو جانچ کر مستقبل کا ایک اچھا خاکہ تیار کر سکیں۔

مزید پڑھیے۔۔۔

سیکورٹی ایکسچینج کمیشن آف پاکستان

سیکورٹی ایکسچینج کمیشن آف پاکستان SECP)) پاکستان کا فنانشل اتھارٹی ادارہ ہے ، جس کا مقصد کارپوریٹ سیکٹر اور کیپیٹل مارکیٹ کی اصلاح اور ان کے لیے ایسے اصول وضوابط بنانا ہے، جس سے ملک میں خوشحالی اور ترقی کا راستہ کھل سکے۔ اس کے ساتھ ساتھ ایک ایسافریم ورک تیار کرنا جس کی بنیاد انٹرنیشنل اسٹینڈرڈز اور ان کی عملی مشق ہو۔

مزید پڑھیے۔۔۔

’’آرگنائزیشن‘‘ کی معاشرتی

ایک پرانی کہاوت ہے: ’’جب آپ اوپر جانے لگیں تو راستے کے لوگوں کو اچھے طریقے سے ملیں، اس لیے کہ جب آپ نیچے آئیں گے تو انہی لوگوں سے واسطہ پڑے گا۔‘‘

تجارتی زندگی میں بھی اسی اصول پر عمل کرنا چاہیے، کامیابی کا خواہشمند آدمی اپنے ماتحتوں، پڑوسیوں اور آس پاس والوں سے اچھے اور نرم طریقے سے ملتا ہے۔ حالانکہ وہ یہ جانتا ہے کہ اس نے اوپر ہی جاناہے، کبھی نیچے نہیں آنا۔ احساس ذمہ داری وہ کامیاب اصول ہے کہ جو بھی اسے اپناتا ہے، ترقی کے زینے پر چڑھتا جاتاہے، کبھی ناکامی کا شکار نہیں ہوتا۔ اپنی ذمہ داری پہچانیے اور اس اصول پر کبھی سمجھوتانہ کیجیے۔ذیل میں ہم آرگنائزیشن (Organization) کی معاشرتی ذمہ داریاں بیان کرتے ہیں۔ اسے جانیے، عمل کیجیے اور ترقی کرتے جائیے۔

مزید پڑھیے۔۔۔

ایکسپورٹ بزنس تجارتی دنیا کا انتہائی منافع بخش پہلو دلچسپ معلومات کے ہمراہ ایک خوبصورت تجزیہ

ماہرین معیشت کااس بات پر اتفاق ہے کہ جس قدر کسی ملک کی برآمدات زیادہ ہوں گی،اس ملک کی ترقی کی رفتاراتنی ہی تیزہوگی۔ دوسری جانب جس قدر برآمدات میں اضافہ ہوگا، اسی قدر ملک کے زرمبادلہ کے ذخائر بڑھیں گے اور ملک ترقی کرے گا۔ اس وقت امریکا میں تقریباًایک کروڑ 13 لاکھ افراد برآمدات کے کاروبار سے وابستہ ہیں جو3 لاکھ پانچ ہزار فرموں میں کام کرتے ہیں اور بے پناہ سرمایہ کماتے ہیں۔ امریکی محکمہ تجارت کی ایک رپورٹ کے مطابق: گزشتہ پانچ سالوں میں امریکا کے مجموعی GDP کا 30 فی صدحصہ صرف برآمدات پر مشتمل تھا۔

مزید پڑھیے۔۔۔

منیجرز کی چھ کمزوریاں

اکثر مزدور اپنے منیجرز سے خفا رہتے ہیں۔ اس کی وجہ کیا ہے؟ ایسا کیوں ہوتا ہے؟ یہ اس وقت پتا چل سکتا ہے جب انسان خود احتسابی کی زحمت گوارا کرے۔ آئیے! اس نشست میں اسی حوالے سے غور کرتے ہیں۔ دیے گئے نکات پر غور کرنے سے رویے میں بہتری اور نتیجتاً ماحول خوش گوار ہو کر ادارہ ترقی کی راہ پر گامزن ہو جائے گا۔ ذیل میں ہم منیجر زکی چند کمزوریوں کو ذکر کرتے ہیں :

مزید پڑھیے۔۔۔