’’آرگنائزیشن‘‘ کی معاشرتی

ایک پرانی کہاوت ہے: ’’جب آپ اوپر جانے لگیں تو راستے کے لوگوں کو اچھے طریقے سے ملیں، اس لیے کہ جب آپ نیچے آئیں گے تو انہی لوگوں سے واسطہ پڑے گا۔‘‘

تجارتی زندگی میں بھی اسی اصول پر عمل کرنا چاہیے، کامیابی کا خواہشمند آدمی اپنے ماتحتوں، پڑوسیوں اور آس پاس والوں سے اچھے اور نرم طریقے سے ملتا ہے۔ حالانکہ وہ یہ جانتا ہے کہ اس نے اوپر ہی جاناہے، کبھی نیچے نہیں آنا۔ احساس ذمہ داری وہ کامیاب اصول ہے کہ جو بھی اسے اپناتا ہے، ترقی کے زینے پر چڑھتا جاتاہے، کبھی ناکامی کا شکار نہیں ہوتا۔ اپنی ذمہ داری پہچانیے اور اس اصول پر کبھی سمجھوتانہ کیجیے۔ذیل میں ہم آرگنائزیشن (Organization) کی معاشرتی ذمہ داریاں بیان کرتے ہیں۔ اسے جانیے، عمل کیجیے اور ترقی کرتے جائیے۔

مزید پڑھیے۔۔۔

ایکسپورٹ بزنس تجارتی دنیا کا انتہائی منافع بخش پہلو دلچسپ معلومات کے ہمراہ ایک خوبصورت تجزیہ

ماہرین معیشت کااس بات پر اتفاق ہے کہ جس قدر کسی ملک کی برآمدات زیادہ ہوں گی،اس ملک کی ترقی کی رفتاراتنی ہی تیزہوگی۔ دوسری جانب جس قدر برآمدات میں اضافہ ہوگا، اسی قدر ملک کے زرمبادلہ کے ذخائر بڑھیں گے اور ملک ترقی کرے گا۔ اس وقت امریکا میں تقریباًایک کروڑ 13 لاکھ افراد برآمدات کے کاروبار سے وابستہ ہیں جو3 لاکھ پانچ ہزار فرموں میں کام کرتے ہیں اور بے پناہ سرمایہ کماتے ہیں۔ امریکی محکمہ تجارت کی ایک رپورٹ کے مطابق: گزشتہ پانچ سالوں میں امریکا کے مجموعی GDP کا 30 فی صدحصہ صرف برآمدات پر مشتمل تھا۔

مزید پڑھیے۔۔۔

منیجرز کی چھ کمزوریاں

اکثر مزدور اپنے منیجرز سے خفا رہتے ہیں۔ اس کی وجہ کیا ہے؟ ایسا کیوں ہوتا ہے؟ یہ اس وقت پتا چل سکتا ہے جب انسان خود احتسابی کی زحمت گوارا کرے۔ آئیے! اس نشست میں اسی حوالے سے غور کرتے ہیں۔ دیے گئے نکات پر غور کرنے سے رویے میں بہتری اور نتیجتاً ماحول خوش گوار ہو کر ادارہ ترقی کی راہ پر گامزن ہو جائے گا۔ ذیل میں ہم منیجر زکی چند کمزوریوں کو ذکر کرتے ہیں :

مزید پڑھیے۔۔۔

ایک مفید و یاد گار تحریر

برداشتایک ہندی کہاوت ہے:’’چوٹ سہے جو شہدکی، وائے گرو میں داس۔‘‘ یعنی جو شخص کسی کے الفاظ کی چوٹ کو سہہ سکتا ہے، وہ اس قابل ہے کہ وہ قائد (leader)بن سکے اور وہ لوگوں کا مخدوم بن سکے۔

 

مزید پڑھیے۔۔۔

منیجرز کی چھ کمزوریاں

اکثر مزدور اپنے منیجرز سے خفا رہتے ہیں۔ اس کی وجہ کیا ہے؟ ایسا کیوں ہوتا ہے؟ یہ اس وقت پتا چل سکتا ہے جب انسان خود احتسابی کی زحمت گوارا کرے۔ آئیے! اس نشست میں اسی حوالے سے غور کرتے ہیں۔ دیے گئے نکات پر غور کرنے سے رویے میں بہتری اور نتیجتاً ماحول خوش گوار ہو کر ادارہ ترقی کی راہ پر گامزن ہو جائے گا۔

مزید پڑھیے۔۔۔

بہتر تعلقات کے لیے

تجارتی دنیا میں لوگوں سے میل جول ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے۔ آپ دو کاندار ہوں، سیلز مین ہوں یا کمپنی منیجر، لوگوں سے ملے جلے بغیر آپ تجارت میں کامیاب نہیں ہو سکتے۔ قدرت نے انسانی دماغ میں متاثر کرنے اور متاثر ہونے دونوں قسم کی صلاحیتیں ودیعت رکھی ہیں۔ کسی کے ساتھ ملاقات کا اثر انسان پر دیر تک رہتا ہے۔ ایک ہنستے مسکراتے شخص سے ہونے والی ملاقات زمانے تک یاد رہتی ہے۔

مزید پڑھیے۔۔۔