آپ کا پاکستانی بھائی ’’ڈینم پینٹس ‘‘کے مالک، منیر بھٹی

ملک پاکستان کو قرآن کریم کی سورۂ رحمن کے ساتھ تشبیہ دی جاتی ہے۔ جس طرح اس سورت میں بے شمار نعمتوں کا ذکر ملتا ہے،اسی طرح اس خداداد مملکت میں اَن گنت نعمتیں پائی جاتی ہیں۔ اللہ تعالی نے ہمارے پیارے وطن کو قسما قسم کی نعمتوں سے مالا مال کیا ہے۔اس عظیم سلطنت کو ایسے رجالِ کار سے نوازا ہے، جنہوں نے اپنے ملک ہی میں کامیابی کو اپنے قدم چومنے پر مجبور کیا ۔ اس کے ساتھ ساتھ وطنِ عزیز کا نام روشن کیا۔ پھر بھی کچھ لوگ ایسے ملیں گے جو اپنی دھرتی ماں کو خیر باد کہہ کر بیرو ن ممالک پیسہ کمانے کے لیے جانا چاہتے ہیں۔

مزید پڑھیے۔۔۔

تجارت اور علم ساتھ ساتھ آرتھر ای اینڈرسن کی کہانی

اینڈرسن کے والدین حالات کے ستائے اپنے ملک ناروے اور رشتے داروں کو چھوڑ کر امریکا میں آ بسے۔ امیدوں کے دیے جلائے جب یہاں پہنچے، تو ان کی توقعات کے چراغ گل ہوگئے۔ یہاں کا ذرہ ذرہ ان کے لیے اجنبی تھا۔ یہاں کے درو دیوار ان کے لیے بے گانے تھے۔ وہاں تو اپنوں سے شکوہ تھا، یہاں تو کسی سے شکایت بھی نہیں کرسکتے تھے۔ وہاں روزگار نہیں ملتا تھا تو یہاں بھی گھر بیٹھے جھولی میں نہیں آ گرنے لگا تھا۔ اگر وہاں سارا دن پیٹ کی آگ بجھانے کے لیے مارا مارا پھرنا پڑتا تھا تو یہاں آکر بھی صبح سے لے کر شام تک کام کرنا پڑتا تھا۔ سارا دن محنت مزدوری کیا کرتے تھے۔

مزید پڑھیے۔۔۔

آگے بڑھتا چلا گیا پائٹروباریلا کی داستان

آج کل لوگوں نے بہت سے کاروبار شروع کر رکھے ہیں۔ کوئی چھوٹی سی دکان کا مالک ہے۔ کسی نے اپنی ذاتی کمپنی لگا رکھی ہے۔ کوئی ہتھ ریڑھی چلا کر گزارا کر رہا ہے۔ کسی نے اپنے گھر میں ہی دکان نما اسٹور کھول رکھا ہے۔ کئی سال کا عرصہ بیت جانے کے بعد بھی یہ لوگ وہیں پر ہوتے ہیں، جہاں سے انہوں نے کاروبار کی ابتدا کی تھی، وہی کاروبار کا معمولی سا حجم اور وہی قلیل سی آمدنی ۔ صبح و شام اس کام کاج کو کرتے بھی ہیں ۔ محنت بھی کرتے ہیں۔

مزید پڑھیے۔۔۔

شوق و جستجو نے بخشی پرواز

ہنری فورڈ (Henry Ford) ایک مریکی صنعت کار اور فورڈ موٹر کمپنی کا بانی تھا۔ فورڈ کمپنی امریکا کی دوسری اور دنیا کی پانچویں بڑی آٹو میکر کمپنی ہے۔ امریکا کی پانچ سو بڑی کمپنیوں میں سے آٹھویں نمبر پر ہے۔ 2009 ء میں اس کی آمدنی 118.3 بلین ڈالر تھی۔2008 ء میں اس نے 5.532 ملین ڈالر موبائلز  بنائیں۔ اس کمپنی کے ملازمین کی تعداد 2 لاکھ 13 ہزار ہے، جو دنیا میں پھیلے ہوئے ہیں۔

مزید پڑھیے۔۔۔

معذور ی نے راستہ نہ روکا

الویٰ اُس روز بہت خوش تھی، جس دن قدرت نے اسے بیٹا عطا کیا۔ وہ اپنے بچے کی دیکھ بھال میں ہر وقت جُتی رہتی۔ جوں جوں اس کا چاند جیسا بیٹا پروان چڑھ رہا تھا، اس کی امیدوں کا شجر بھیبڑھ رہا تھا۔ وہ اپنے بچے کی تعلیم و تربیت کا خاص خیال رکھا کرتی۔ وہ جسمانی نشوونما کے ساتھ ساتھ ذہنی بالیدگی کا سامان کرتی۔ اس کی صحت اور تندرستی کے بارے میں بہت محتاط رہتی۔ وہ اپنے بیٹے کی ہرخواہش پوری کرتی۔

مزید پڑھیے۔۔۔

ماچس کی ڈبیا یا قسمت کی پڑیا ’’آئی کیا‘‘کا بانی انگوار کمپراڈ

انگوار کمپراڈ(Ingvar Kamprad) ایک سویڈش بزنس مین ہے۔ یہ ایک مشہور ومعروف اور دنیا کی بڑی بڑی فرنیچر کمپنیوں میں سے ایک کمپنی ’’IKEA‘‘ کا بانی ہے۔ یہ دنیا کا امیر ترین اور کامیاب ترین آدمی شمار کیا جاتا ہے۔ اس کی کمپنی IKEA کے دو سو سے زائد اسٹورز 31 ممالک میں پھیلے ہوئے ہیں۔ اس کے ملازمین کی تعداد 75 ہزار سے زیادہ ہے۔ اس کی سالانہ سیل 12 بلین ڈالر سے زائد ہوتی ہے۔

مزید پڑھیے۔۔۔