رواجی طریقے نہیں، بزنس تعلیم کامیابی کی ضامن ہے

شریعہ اینڈ بزنس اپنی ابتدائی زندگی کے بارے میں بتائیں؟ محمود قاسم میں نے ایک علمی گھرانے میں آنکھ کھولی۔ اسی وجہ سے بچپن ہی سے پڑھنے کا بہت شوق تھا۔ کتابوں سے لگن اور تعلق غیر معمولی تھا۔ اس مطالعے نے میری ذہنی وسعت میں ایک نمایاں کردار ادا کیا۔

 

مزید پڑھیے۔۔۔

اسلامی ممالک میں حلال و حرام سے متعلق غفلت عام ہے

شریعہ اینڈ بزنس افانکا اور اس کے مقاصد و خدمات کی طرف جانے سے پہلے آنجناب کا تعارف سامنے آ جائے۔ ڈاکٹر محمد منیر چوہدری میں اصلاً پاکستانی ہوں۔ شہر سرگودھا سے تعلق ہے۔ فیصل آباد یونیورسٹی سے فوڈ سائنس میں ایف ایس سی اور ایم ایس سی کیا۔ اس کے بعد دو سال تک فوڈ سائنس میں ہی ریسرچ کا کام کیا۔ بعد ازاں حکومت نے مجھے بیروت جانے کا وظیفہ دیا۔

مزید پڑھیے۔۔۔

’’پلاسٹک‘‘کا بازار مستحکم اور کھپت بے حدہے

شریعہ اینڈ بزنس آپ نے ’’عمیر پیٹروکیمیکلز‘‘ نامی کمپنی قائم کی، اپنے تجربات کی روشنی میں بتائیے اس کا آغاز کیسے کیا؟ کن مراحل سے گزرتے ہوئے کامیابیوں سے ہم کنار ہوئے؟
ابراہیم کسُمبی تعلیم حاصل کرنے کے بعد میں کچھ عرصہ ملک سے باہر رہا۔ وہاں میں نے کام کیا، نوکریاں کیں۔ اس طرح میرے پاس کچھ رقم جمع ہو گئی۔ اسے لے کر میں پاکستان آیا۔ میری خواہش تھی کہ کاروبار کروں۔ پھر بہت چھوٹے پیمانے پر میں نے اس کا آغاز کیا۔

مزید پڑھیے۔۔۔

ٹیکس چورپوری قوم کا مجرم ہوتا ہے

شریعہ اینڈ بزنس آغاز آپ کے تعارف اور تعلیمی و تجارتی پس منظر سے کرتے ہیں۔ ابراہیم کسمبی مجھے کاروبار سے منسلک ہوئے 24 سال ہو گئے ہیں۔ تعلیم ملک و بیرون ملک دونوں جگہ حاصل کی ہے۔ پاکستان میں بی کام تک کی تعلیم حاصل کی۔ اسی طرح IBA کراچی سے کچھ کورسز بھی کیے۔ میرا کاروبار پلاسٹک کا خام مال یعنی پلاسٹک کا دانہ اور کیمیکلز وغیرہ کی در آمد ہے۔ میں اس کا ڈسٹری بیوٹر بھی ہوں، کچھ غیر ملکی کمپنیوں کو سپلائی کرتا ہوں۔ خام مال کا تعلق ’’پٹرولیم‘‘ سے ہے۔

مزید پڑھیے۔۔۔

کاروبار کی پذیرائی کے لیے مناسب قیمت اور اعلیٰ معیار ناگزیر ہے

شریعہ اینڈ بزنس
سب سے پہلے ہم آپ کا تعارف اور تعلیمی پس منظر جاننا چاہیں گے؟

مزید پڑھیے۔۔۔

ہر نوجوان بل گیٹس بن سکتا ہے

٭…کویتی بینک ہمارے منصوبہ جات میں خصوصی دلچسپی لینے لگے جو کسی بھی تاجر کے لیے بڑی اہمیت کی بات ہوتی ہے۔ 2003 ء میں جب ہمارا گروپ خوب مشہور ہو گیا تو ہم نے کویتی دار الحکومت تک اپنے پَر پھیلا دیے ٭…یہ دنیا مقابلے کی ہے، یہاں پر ہر دوسرا شخص آپ کی ٹانگیں کھینچنے کی کوشش کرے گا۔ اپنے عملے اور ٹیم پر مکمل انحصار کرنے کے بجائے اگر خود بھی کام میں شریک اور نگرانی کرتے رہیں گے تو بہت جلد ترقی کی منازل طے کر لیں گے

مزید پڑھیے۔۔۔