آپ شریعہ آڈٹ کیسے کریں

تعارف ، مقصد
شریعہ آڈٹ مالی امور کے آزادانہ اور خود مختار جائزے کا نام ہے۔ نیز ادارے کی روزمرہ معلومات جو شرعی اصولوں اور قوانین کی پیروی کرتے ہوئے تجاویز، اصلاح اور قابل ذکر اقدامات سے متعلق ہوں۔ شریعہ آڈٹ کا مقصد اس بات کی یقین دہانی کرانا کہ شریعہ کمپلائنس کے اندرونی کنٹرول کا نظام بالکل صحیح بھی ہے اور نافذ العمل بھی۔ نیز اس حوالے سے اطمینان دلانا کہ یہ نظام شریعہ بورڈ اور شریعہ ایڈوائزر کی طرف سے جاری کردہ اصولوں اور شرعی اہداف

مزید پڑھیے۔۔۔

خرید وفروخت کے وقت اختیارات (Options) کا بیان

خرید وفروخت کے وقت بائع (Seller)اور مشتری (Buyer)کو کچھ اختیارات حاصل ہوتے ہیں، قبل ازیں آپشنز کی پہلی قسم ’’خیار شرط‘‘ کا بیان ہو چکا۔ یہاں بقیہ تین ذکر کرتے ہیں۔
خیار ِ وصف:
اگر بیع میں عقد کے وقت بائع نے مبیع کے اندر کوئی اچھی اور مرغوب وصف یا کوالٹی بیان کی اور اس وصف کے موجود ہونے کی شرط پر مشتری نے اسے خرید لیا

مزید پڑھیے۔۔۔

تقسیم دولت کے مقاصد اور عوامل پیدائش

بنیادی طور پر اگر شریعت اسلامیہ کی معاشی تعلیمات پر غو ر کیا جائے تو ہمیں درج ذیل تین باتیں مقاصدکے درجےمیں نظر آتی ہیں:

1.ایک قابل عمل اور فطری نظامِ معیشت کا قیام:

اگر تعلیمات اسلامی کا مطالعہ کیا جائے تو یہ بات واضح طور پر سمجھ میں آتی ہے کہ اسلامی تعلیمات تقسیم دولت کا ایک فطری اور قابلِ عمل نظام نافذ کرنا چاہتی ہیں، جس میں کسی پر جبر و تشدد نہ ہو۔

مزید پڑھیے۔۔۔

مال و دولت کس کی ملکیت ہے؟

مال و دولت اﷲ تعالیٰ کی عطا ہے، اس کو یہ کلی اختیار ہے وہ انسان کو اس بات کا پابند بنائے کس طرح کمایا جائے اور کس طرح خرچ کیا جائےجو کچھ ہم مال کماتے ہیں اس کا حقیقی مالک کو ن ہے ؟ انسان ، ریاست یا اللہ تعالیٰ۔اس سلسلے میں تین مختلف نظریے ہیں:

مزید پڑھیے۔۔۔